زیڈبی سی کے ڈائریکٹرز کا اجلاس، قاضی ریحان سبکدوش حکیم بلوچ نئے سربراہ چنے گئے۔

زرمبش براڈ کاسٹنگ کارپوریشن کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ایک غیرمعمولی اجلاس میں سابق ڈائریکٹر کی سبکدوشی کے بعد نئے ڈائریکٹرکا تقرر عمل میں لایا گیا ۔

طے شدہ ایجنڈے کے تحت طلب کیے گئے اجلاس میں حکیم بلوچ کو زیڈبی سی کا نیا ڈائریکٹر چنا گیا ۔ ان کے علاوہ حسن دوست کو ڈائریکٹر آف پلاننگ اینڈ سروسز اور منھاج مختار کو ڈائریکٹر آف میوزک سیکشن کا عہدہ سونپا گیا۔

بورڈ اجلاس سے اپنے اختتامی خطاب میں ادارے کے سابق سربراہ قاضی داد محمد ریحان کا کہنا تھا کہ ” ان کے لیے آج کا دن ایک خوشگوار احساس کے ساتھ یادگار ہے کہ ادارے میں بغیر کسی بحران اور ہنگامی صورتحال کے قیادت کی تبدیلی ہوئی ہے ۔ یہ ہمارے جمہوری روایات کو تسلسل دینے اور اداروں پر شخصی بالادستی کے خدشے کو ختم کرنے کے عزم کا عملی اظہار ہے ہم نے کردکھایا کہ ادارے کسی فرد کا محتاج نہیں اور نہ ہی ادارے کسی فرد واحد کی کارکردگی پر انحصار کرتے ہیں ۔

ادارے کی قیادت خود سے بہتر اور زیادہ متحرک افراد کے ہاتھوں میں سونپتے ہوئے بے انتہا خوشی کا احساس ہورہا ہے ۔ ادارے کے اہم ترین عہدے سے سبکدوشی کا مطلب ادارے سے لاتعلق ہونا نہیں بلکہ ادارے کو شخصی اثرات سے آزاد کرکے ادارہ جاتی بنیاد فراہم کرتے ہوئے بطور کارکن کام جاری رکھنے کا عزم اب بھی رکھتا ہوں۔نئے قیادت کے ساتھ اسی طرح کام کرؤں گا جس طرح انہوں نے میری قیادت میں ادارے کی بہتری کے لیے وہ کچھ کیا جو اسے ادارے کے سربراہ کے طور پر اولین اور بہترین انتخاب بنانے کا سبب ہیں ۔

ادارے کے قیام سے لے کر اب تک ادارے کی خودمختاری کا دفاع کیا ۔ بی این ایم کے ماتحت ہونے کے باوجود دوستوں کو اس بات پر قائل کیا کہ ادارہ اپنے فیصلے میں آزاد بورڈ آف ڈائریکٹرز اور ڈائریکٹر کی سربراہی میں کام کرئے گا جو ہماری تنظیمی تاریخ میں ایک منفرد مثال ہے ۔ نئے قیادت سے یہی امید رکھتا ہوں کہ وہ ادارے کی خودمختاری کی حفاظت کریں گے اور پارٹی کے ساتھ ہم آہنگی کو متوازن اور ادارہ جاتی بنیادوں پر استوار رکھیں گے ۔ شخصی مداخلت کسی بھی ادارے کی ترقی کے لیے نقصان دہ ہیں اور ایک میڈیا سے جڑے ادارے کو پیشہ ورانہ مہارت سے ہی چلایا جانا چاہئے یہی امید پارٹی قیادت سے رکھتا ہوں کہ وہ مخلتف پہلوؤں پر ادارے کی وسعت اور کارگردگی کو پرکھتے ہوئے معاونت کریں گے، معاونت جس کا ہمیں انتظار رہا ہے۔

آج کی تبدیلی طے شدہ تھی اور اِسے اسی سال ہونا تھا امید رکھتا ہوں یہ شاندار روایت کے طور پر جاری رہئے گی۔”

سبکدوش ہونے والے ڈائریکٹر نے نو منتخب ڈائریکٹرز سے ان کے عہدوں کا حلف لیا جس سے اجلاس کا پہلا حصہ ختم ہوا ۔

اجلاس کا دوسرا حصہ ادارے کے نئے سربراہ کی صدارت میں ہوا جس میں ادارے کو درپیش مالی مشکلات سمیت دیگر امور پر تفصیلی گفتگو کی گئی ۔

نو منتخب ڈائریکٹر حکیم بلوچ نے اپنے ابتدائی خطاب میں ادارے کی فعالیت کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کیا ۔انہوں نے کہا کہ وہ اس عہدے پر کام کرتے ہوئے بورڈ کے تمام ممبران کی حمایت اور ہمہ وقت مشوروں کا طلب گار ہیں۔

اجلاس میں ادارے کی فعالیت اور کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے اڈوائزری بورڈ کے قیام کی بھی منظوری دی گئی جس میں ادارے کے ذمہ داروں کے علاوہ دیگر شخصیات کو شامل کیا جائے گا ۔ اجلاس میں اس سلسلے میں ابتدائی طور پر پیش کیے گئے تمام ناموں پر اتفاق کیا گیا ۔

اجلاس کی کارروائی کی نظامت کے فرائض کیا بلوچ نے ادا کیے ۔