ایران جانیوالے سندھ کے زائرین کو بلوچستان داخلے پر روک دیا گیا، زائرین کا احتجاج شاہراہ بلاک

جعفرآباد :  سندھ سے بلوچستان کے راستے داخل ہونے والے زائرین کی 21 گاڑیوں کے قافلے کو سندھ بلوچستان کے بارڈر ڈیرہ اللہ یار بائی پاس پرروکا گیا ۔ سندھ سے آنے والے زائرین جوکہ بلوچستان کے راستے ایران جارہے تھے ۔


جن کو ڈیرہ اللہ یار بائی پاس پر این او سی نہ ہونے باعث روکا گیا21 گاڑیوں کے قافلے میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد موجود تھی جنہیں جعفرآباد پولیس نے آگے جانے سے روک دیا ۔ اس موقع پر شیعہ رہنما علامہ مقصود ڈومکی علامہ برکت مطہری ودیگر زائرین کے مطابق ہمیں ڈیرہ اللہ یار پولیس خواہ مخواہ تنگ کررہی ہے ہم سب کے پاس پاسپورٹ موجود ہیں ۔

دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ زائرین کے پاس این او سی نہ ہونے پرانہیں روکا گیاہے۔شام تک انہیں سیکورٹی کلرینس ملنے کے بعد انہیں چھوڑا جائے گااور سیکورٹی کلیئرنس لینے کے بعد کوئٹہ روانہ کر دیا جائے گا جبکہ مشتعل زائرین نے قومی شاہراہ بلاک کرکے مرکزی حکومت اور بلوچستان کے خلاف نعرہ بازی کی اس موقع پرخواتین اور بچوں نے بھی مظاہرہ کیا 11 گھنٹے با بند رہی بعد ازاں ہوم ڈیپارٹمنٹ کی کلیرنس کے بعد قافلہ پولیس کی سخت سیکورٹی کے بعد روانہ کردیا گیا۔